Topics

تو آج خدارا کل کے بارے میں نہ سوچ

تو آج خدارا کل کے بارے میں نہ سوچ

آئے گی اجل ، اجل کے بارے میں نہ سوچ

رشتہ تو ہمارا ہے ازل سے لیکن

پی اور پلا ، ازل کے بارے میں نہ سوچ

تشریح!           یہ کون نہیں جانتا کہ آج نہیں تو کل ہمیں مرجانا ہے ۔ زندگی صرف آج کا نام ہے۔ پھر تو کیوں والی کل کے بارے میں پریشا ن ہے؟ ۔۔۔۔۔کبھی تونے سوچا ہے کہ یہ مرنا کیا ہے؟ ۔۔۔۔ہمارا رشتہ قدرت کے ساتھ اسی وقت سے قائم ہے جب سے خود قدرت موجود ہے، قدرت نہیں چاہتی کہ ہم اس سے جدا ہوں، قدرت ہمیں اس دنیا سے اس دنیا میں اس لیے الٹ پلٹ کررہی ہے کہ ہمار ا تعلق اس کے ساتھ قائم رہے۔ مرنا جب ہمارا مقدر بن چکا ہے تو معرفت حق کی شراب خود پی اور دوسروں کو بھی پلا کیوں کہ نقد سودا ادھار سےاچھا ہے۔



_____________

روحانی ڈائجسٹ: جون ۰۴

Topics


Sharah Rubaiyat

خواجہ شمس الدین عظیمی

ختمی مرتبت ، سرور کائنات فخر موجودات صلی اللہ علیہ وسلم کے نور نظر ، حامل لدنی ، پیشوائے سلسۂ عظیمیہ ابدال حق حضور قلندر بابا اولیاء ؒ کی  ذات بابرکات نوع انسانی کے لیے علم و عرفان کا ایک ایسا خزانہ ہے جب ہم تفکر کرتے ہیں تو یہ بات روز روشن کی طرح عیا ں ہوجاتی ہے کہ اللہ تعالی نے جہاں آپ تخلیقی فارمولوں اور اسرار و رموز کے علم سے منور کیا ہے وہاں علوم و ادب اور شعرو سخن سے بہرور کیا ہے۔ اسی طرح حضوور بابا جی ؒ کے رخ جمال (ظاہر و باطن) کے دونوں پہلو روشن اور منور ہیں۔

لوح و قلم اور رباعیات جیسی فصیح و بلیغ تحریریں اس بات کا زندہ  و جاوید ثبوت ہیں کہ حضور بابا قلندر بابا اولیاءؒ کی ذات گرامی  سے شراب عرفانی ایک ایسا چشمہ پھوٹ نکلا ہے جس سے رہروان سلوک تشنۂ توحیدی میں مست و بے خود ہونے کے لیے ہمیشہ سرشار  ہوتے رہیں گے۔